لفظ ” رجب ” کے منصرف اور غیر منصرف ہونے میں اختلاف ہے ، دونوں ہی قول ہیں ، خواہ کسی بھی قول کو ترجیح حاصل ہو، اس مقام پر بہر حال لفظ ” رجب ” منصرف ہے، اس لئے کہ اگر غیر منصرف ہونے کے قول کو ترجیح دیجائے تب بھی ” إذا نكّر صرف ” کے قاعدہ سے یہاں منصرف ہوگا، البتہ ترجمۃ الباب میں غیر منصرف پڑھنے کی گنجائش ہے۔ دیکھئے معارف السنن : 5/572-573

(درس ترمذی : 3/209)

 

Subscribe Ke Bad Apne Email Me jakar Verifide Zarur kare. Shukriyah

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here